Monday, August 2, 2021

اسلام آباد میں لڑکی کو ملازمت کا جھانسہ دے کر جنسی زیادتی کا ایک اور کیس

عوامی حلقوں اور دانش وروں کے مطابق جنسی درندگی کے ایسے مجرموں کو سرعام پھانسیاں دینے تک ایسے افسوس ناک واقعات کی روک تھام ناممکن ہے

اسلام آباد پولیس نے ایک نوجوان لڑکی کو ملازمت دینے کا جھانسہ دے کر اسے جنسی تشدد کا نشانہ بنانے کے الزام میں ایک شخص کو گرفتار کر لیا ہے۔ اسلام آباد پولیس نے یہ کارروائی پشاور کی ایک رہائشی لڑکی کی درخواست پر کی ہے ۔ اس درخواست میں متاثرہ لڑکی نے یہ موقف اپنایا کہ ملزم  نے جو کہ ان کے جاننے والوں میں سے ہے ، اسے فون کر کے کہا کہ وہ اسلام آباد آ جائے تو وہ اس کو اسلام آباد میں ملازمت دلوا دے گا

متاثرہ لڑکی کے مطابق جب وہ اسلام آباد آئی تو ملزم پہلے اسے اپنی گاڑی میں گھماتا رہا اور پھر رات کے وقت ایک ہوٹل میں لے جا کر اسے جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا ، جہاں ملزم نے پہلے سے کمرہ بک کروایا ہوا تھا۔

اسلام آباد کے تھانہ شہزاد ٹاون پولیس کے مطابق ملزم متاثرہ لڑکی کو پہلے کمرے میں چھوڑ کر چلا گیا تھا ۔ اور پھر کچھ دیر کے بعد دوبارہ واپس آیا اور بہانے سے لڑکی کے کمرے میں گھس کر اسے جنسی تشدد کا نشانہ بنایا۔ مقامی پولیس کے مطابق ملزم لڑکی کو جنسی تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد اسے زبردستی اپنی گاڑی میں سوار کر کے رات کے اندھیرے میں ایک ویران جگہ پر اکیلا چھوڑ کر فرار ہو گیا۔

اسلام آباد پولیس کے مطابق متاثرہ لڑکی نے ریسکیو ون فائیو پر اطلاع دی جس کے بعد پولیس نے موقع پر پہنچ کر لڑکی کا بیان قلمبند کیا اور بعدازاں ملزم کو اس کی لوکیشن معلوم کرنے کے بعد اس کو راولپنڈی کے علاقے سے گرفتار کرلیا۔

یاد رہے کہ گذشتہ چند ہفتوں کے دوران سوشل میڈیا وائرل تصاویر کے ذریعے بلیک میلنگ اور جنسی زیادتی کے کیسوں کے بارے مسلسل خبریں گردش میں رہی ہیں۔


دفتری کولیگ لڑکی کی غیر اخلاقی تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل کرنے والا گرفتار

LATEST NEWS

CHINESE NEWS

OUR DEFENCE NEWS SITE

spot_img

INDIAN NEWS