Saturday, April 17, 2021

ضمنی الیکشن میں تحریک انصاف کی شکست عمران خان کیلئے کڑے سیاسی امتحانوں کا واضع اشارہ ہے

تحریک انصاف کی سیاسی ساکھ کیلئے وزیر آباد ضلع گوجرانوالہ کی صوبائی نشست اور ڈسکہ ضلع سیالکوٹ کی قومی اسبلی نشست پر شکست سے بڑا نقصان صوبہ خیبر پختون خواہ کے ضلع نوشہرہ کی صوبائی اسمبلی کی اپنی سیٹ پر شکست ہے

قومی اور صوبائی اسمبلی کے چار حلقوں پر ضمنی انتخابات میں تین نشتوں پر پی ٹی آئی کو واضع شکست ہوئی ہے۔  نوشہرہ کی نشست پی کے  63  کے ضمنی الیکشن میں نون لیگ کے امیدوار اختیار ولی نے 21 ہزار 1 سو 22 ووٹ حاصل  کر کے گذشتہ انتخابات میں پی ٹی آئی کی جیتی ہوئی نشست چھین کر فتح حاصل کی ہے۔ جبکہ  پی ٹی آئی کے محمد عمر 17 ہزار 23 ووٹ لے سکے۔

گوجرانوالہ میں تحصیل وزیر آباد کی صوبائی نشست سے مسلم لیگ نون کی امیدوار طلعت محمود چیمہ فتح یاب ہوئی ہیں۔ یہاں سے مسلم لیگ نون کی امیدوار طلعت شوکت چیمہ کو 55 ہزار 9 سو 3 اور تحریک انصاف کے چوہدری یوسف مہر کو 48 ہزار 4 سو 84 ووٹ ملے ہیں ۔ جبکہ جماعت اسلامی کے امیدوار ناصرمحمود صرف 6 ہزار 6 سو 32 ووٹ حاصل کر سکے ہیں ۔

پنجاب اسمبلی کی یہ نشست پی پی 51 مسلم لیگ ن کے ایم پی اے شوکت منظور چیمہ کے انتقال کے باعث خالی ہوئی تھی اور ن لیگ نے شوکت منظور چیمہ کی بیوہ بیگم طلعت شوکت چیمہ کو  امیدوار نامزد کیا تھا جب کہ تحریک انصاف نے چوہدری یوسف کو میدان میں اتارا تھا


تحریک انصاف کے دور کے معاشی قرضوں کے بارے یہ خبر بھی پڑھیں

پاکستان کے قرضوں میں 37 کھرب اور پی ٹی آئی کے ڈھائی سالہ دور میں 21 کھرب کا اضافہ

 

سیالکوٹ میں ڈسکہ این اے 75 کے نتائج کے بارے متضاد آراء ہیں ۔ جیو پر نشر ہونے والی خبر کے مطابق یہاں سے مسلم لیگ کی طرف سے سیدہ نوشین افتخار 1 لاکھ 58 ہزار 7 سو 91 ووٹ لیکر جیت گئی ہیں ۔ تحریک انصاف کے نامزد امید وار علی اسجد ملہی 1 لاکھ  42 ہزار 3 سو 11 ووٹ لیکر شکست کھا  گئے ہیں۔ جبکہ پی ٹی آئی کے حلقوں کی طرف سے اسے فیک نیوز قرار دیا جا رہا ہے۔

ضلع کرم کے حلقہ این اے 45 کرم ون میں بھی آج ضمنی انتخاب میں 27 امیدوار میدان میں ہیں۔ تک پی ٹی آئی کے فخرزمان 16 ہزار 9 سو 11 ووٹ لیکر کامیاب قرار پائے ہیں۔ جبکہ جے یو آئی فضل الرحمن گروپ کے جمیل چمکنی 15 ہزار 7 سو 61 ووٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے ہیں ۔

اس ضمنی الیکشن میں پنجاب اور کے پی کے سے حکمران جماعت کی واضع شکست مستقبل قریب میں عمران خان صاحب کیلئے کڑے سیاسی امتحانات کا اشارہ دے رہی ہے۔ نوشہرہ کے مضبوط حلقے سے تحریک انصاف کی شکست مہنگائی اور انتظامی بدنظمی کیخلاف ایک ایسا خاموش ردعمل ہے۔ جو مستقبل میں اجتماعی عوامی رائے عامہ کی فیصلہ کن تبدیلی کا باعث بن سکتا ہے۔ جبکہ میرے مطابق جمہوریت اور نظام کی بقا کیلئے موجودہ حکومت کو اپنی 5 سالہ مدت پوری کرنے کا موقع دینا ہو گا۔


امریکہ میں خاتون صحافی کیساتھ بداخلاقی کرنے والے وائٹ ہاؤس اہلکار کے بارے یہ خبر بھی پڑھیں

صدر جو بائیڈن نے خاتون صحافی کو دھمکی دینے پر وائٹ ہاؤس کے وائس سیکریٹری کو استعفیٰ دینے پر مجبور کر دیا

LATEST NEWS

CHINESE NEWS

OUR DEFENCE NEWS SITE

spot_img

INDIAN NEWS