Saturday, April 17, 2021

چین میں مقامی فوڈ فیکٹری کی آئس کریم میں کووڈ – 19 کرونا وائرس کی نشاندھی

چینی خبر رساں ادارے کے مطابق چین کی ایک مقامی آئس کریم فیکٹری  کے تیار کردہ 4 ہزار 836 پیکٹس کے وائرس سے آلودہ ہونے کی تصدیق ہوئی ۔ لیکن ان میں سے 2 ہزار 89 ڈبوں کو فروخت کیا جا چکا ہے۔

 دنیا بھر میں کورونا کی دوسری لہر ایک جان لیوا وبا بن کر پھیل رہی ہے۔ اس مشکل صورت حال میں چین میں آئس کریم اور دودھ کی دیگر خوردنی پراڈکٹ بنانے والی ایک کمپنی کی سپلائی کردہ آئس کریم میں کووڈ -19  وائرس کی نشاندھی ہوئی ہے۔ وائرس کی تصدیق کے بعد چین کےسرکاری حکام نے کمپنی کی ہزاروں مصنوعات کو ضبط کر کے حفاظتی اقدامات شروع کر دئے ہیں۔

چینی خبر رساں ادارے کے مطابق چین کی ایک مقامی آئس کریم فیکٹری  کے تیار کردہ 4 ہزار 836 پیکٹس کے کورونا وائرس سے آلودہ ہونے کی تصدیق ہوئی ہے ۔ جبکہ ان میں سے 2 ہزار 89 ڈبوں کو فروخت کیا جا چکا ہے۔

۔

چین اور امریکہ تنازعہ کے بارے یہ خبر بھی پڑھیں

چین نے ٹرمپ کی امریکی پابندیوں کا مقابلہ کرنے کیلئے ملکی قانون نافذ کر دیا

خبر ایجنسی اداروں کے مطابق ابتدائی تحقیقات میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ ایک ہزار 812 ڈبوں کو مختلف صوبوں میں سپلائی کر دیا گیا تھا۔ جن میں سے 935 ڈبے فروخت کیلئے مارکیٹوں میں پہنچا دیے گئے تھے۔  لیکن خوش قسمتی سے سپلائی کردہ ڈبوں میں سے ابھی صرف 65 ڈبے فروخت ہوئے تھے۔

تحقیات سے پتہ چلا ہے کہ آئس کریم بنانے والی اس کمپنی نے آئس کریم تیار کرنے کیلئے دودھ کا خشک پاؤڈر نیوزی لینڈ اور یوکرین سے درآمد کیا تھا۔ اس حوالے سے تحقیقات کا دائرہ نیوزی لینڈ اور یوکرین کے ایکسپورٹر کمپنیوں تک بڑھایا جا رہا ہے۔

 

پاکستان ڈیفنس کے بارے یہ مضمون بھی پڑھیں

پاک فضائیہ کے ایف ۔ 16 فالکن اور انڈین رافیل طیاروں کا موازنہ اور حقائق

LATEST NEWS

CHINESE NEWS

OUR DEFENCE NEWS SITE

spot_img

INDIAN NEWS