Monday, August 2, 2021

لاہور میں چھ سالہ سوتیلی بیٹی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے والا بدبخت باپ گرفتار

ماں نے ملزم کو بیٹی کے ساتھ غلط حرکات کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑا تو وحشی ملزم نے بیوی پر تشدد کرنے کے بعد فائرنگ کر کے زخمی کر دیا

لاہور کے علاقے شاہدرہ میں پولیس نے ایک بدبخت شخص کو اپنی چھ سالہ سوتیلی بیٹی کے ساتھ جنسی زیادتی کے الزام میں گرفتار کیا ہے۔ پولیس کے مطابق ملزم نے اس گھناؤنے جرم سے روکنے پر اپنی بیوی پر تشدد کے بعد اسے فائرنگ کر کے زخمی کر دیا تھا۔

لاہور کی رہائشی خاتون نے شاہدرہ پولیس سٹیشن میں رپورٹ درج کروائی کہ ان کے دوسرے خاوند نے مبینہ طور پر ان کی چھ سالہ بچی اور اپنی سوتیلی بیٹی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔ انھوں نے پولیس کو بتایا کہ گذشتہ ایک ماہ کے دوران ملزم کئی مرتبہ بچی کو زیادتی کا نشانہ بنا چکا تھا۔

خاتون نے ملزم کو اپنی بیٹی کے ساتھ غلط حرکات کرتے ہوئے پکڑ لیا اور جب اسے اس گھناؤنے جرم سے منع کیا تو ملزم نے اس پر تشدد کرنا شروع کر دیا۔ اس دوران ملزم نے پستول سے فائرنگ کرتے ہوئے اپنی بیوی کو زخمی بھی کر دیا۔

شاہدرہ تھانے میں درج مقدمے کی ایف آئی آر کے مطابق مدعی مقدمہ خاتون نے پولیس کو بتایا کہ اس واقعے کے بعد ملزم نے اسے گھر سے نکال دیا تھا۔ تاہم بچی کو اپنے پاس رکھ لیا تھا اور اگلے کئی روز تک وہ بدبخت اپنے چند نا معلوم دوستوں کے ساتھ مل کر بیٹی کو جنسی تشدد کا نشانہ بناتا رہا۔

انچارج انویسٹیگیشن سٹی ڈویژن لنگڑیال کے مطابق دوران تفتیش معلوم ہوا کہ ملزم بچی کو غلط طریقے سے چھوتا تھا۔ وہ بچی کو موبائل پر پورن فلمیں بھی دکھاتا رہا اور اس کے بعد اس نے بچی کو جنسی زیادتی کا نشانہ بھی بنایا۔

انچارج انوسٹیگیشن کے مطابق پولیس کے سامنے یہ واقعات اس وقت آئے جب گولی لگنے کے بعد بچی کی والدہ ہسپتال پہنچیں۔ بچی کی والدہ نے اسے بیٹی کے ساتھ نازیبا حرکات کرتے ہوئے دیکھ لیا تھا۔ اور اس پر ان کے درمیان جھگڑا ہوا جس کے بعد ملزم نے اپنی اہلیہ پر فائرنگ کر دی تھی۔ تھانے میں درج مقدمے کے مطابق والدہ نے پولیس کو بتایا کہ انھوں نے لگ بھگ آٹھ برس قبل پاکپتن میں شادی کی تھی۔ تین سال کے بعد ان کے خاوند نے ان کو  طلاق دے دی تھی۔

جنسی تشدد کا نشانہ بننے والی بچی اس خاتون کے پہلے خاوند کی تھی۔ اس کے کچھ عرصہ بعد انھوں نے شاہدرہ کے رہائشی اس ملزم شخص سے دوسری شادی کر لی تھی اور بچی ان کے ساتھ رہتی تھی۔

پولیس سب انسپکٹر شفق کے مطابق بچی کی میڈیکل رپورٹ میں ریپ ثابت ہو گیا تھا جس کے تحت کارروائی کرتے ہوئے ملزمان کو گرفتار کر کے جیل بھجوا دیا گیا تھا۔

پولس کا کہنا تھا کہ ملزم کے ساتھ ان کے دو ساتھیوں کو بھی بچی کو جنسی طور پر ہراساں کرنے اور جنسی تشدد کرنے کے الزام میں جیل بھجوا دیا گیا تھا۔ ملزم کے خلاف اہلیہ پر فائرنگ کر کے زخمی کرنے کا بھی مقدمہ درج کیا گیا ہے۔


دفتری کولیگ لڑکی کی غیر اخلاقی تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل کرنے والا گرفتار

LATEST NEWS

CHINESE NEWS

OUR DEFENCE NEWS SITE

spot_img

INDIAN NEWS