Saturday, April 17, 2021

 وزیر اعظم  کے خصوصی معاون ندیم افضل چن نے حکومتی عہدے سے استعفیٰ دے دیا

ندیم افضل چن کی طرف اس استعفٰی  کی کوئی وجہ بیان نہیں کی گئی  ہے۔ جبکہ سیاسی مبصرین  کا کہنا ہے  کہ اس استعفے کی وجہ گزشتہ روز کا کابینہ اجلاس اور اس میں وزیر اعظم کا سخت گیر رویہ  ہو سکتا ہے۔

پاکستان کے وزیر اعظم  عمران خان کی طرف سے  کابینہ اجلاس میں  وزراء کی  کارکردگی اور حکومت سے اختلاف کے حوالے سے سخت  موقف اختیار کیا گیا تھا۔ عمراں خاں نے  واضع طور پر کہا تھا کہ جو وزیر  حکومتی پالیسیوں سے اختلاف رھتا ہے وہ استعفیٰ دے۔ اس حوالے سے وزیر اعظم کے معاون خصوص  ندیم افضل چن نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔

ندیم افضل چن کی طرف اس استعفٰی  کی کوئی وجہ بیان نہیں کی گئی  ہے۔ جبکہ سیاسی مبصرین  کا کہنا ہے  کہ اس استعفے کی وجہ گزشتہ روز کا کابینہ اجلاس اور اس میں وزیر اعظم کا سخت گیر رویہ  ہو سکتا ہے۔

یاد رہے  کہ وفاقی  کابینہ کے اجلاس  کے دوران وزیر اعظم عمران خان  نے واضح  طور پر کہا  تھا کہ جو  وفاقی  وزیر   حکومت  سے اختلاف رکھتا ہے اور  پارٹی پالیسی کے مطابق نہیں چل سک ، اس کیلئے بہتر ہے کہ  وہ استعفیٰ دے دے۔ ورنہ اب وہ اس بات کا فیصلہ کریں گے کہ کون حکومت میں رہے گا اور کون نہیں رہے گا۔

خیال رہے کہ کوئٹہ میں ہزارہ  برادری کے 11 افراد کے قتل کے  حوالے سے  وفاقی وزیر کے برابر عہدہ رکھنے والے وزیر اعظم ے معاون خصوصی ندیم افضل چن نے وزیر اعظم  کے موقف سے  اختلاف  کرتے ہوئے الگ  پالیسی اپنائی تھی ، اس حوالے سے  انہوں نے  سوشل میڈیا  اکاؤنٹ   پر  اپنے ذاتی موقف کا  کھلے الفاظ  میں  اظہار  کیا تھا ۔

 اس سلسلے میں جب  حکومتی عہدیدار  شہباز گل نے ان کی توجہ  حکومتی پالیسی  کی جانب مبذول کرائی  تھی ، تو انہوں نے  ردعمل میں  حکومتی پالیسی سے اختلاف کرتے ہوئے   سخت  ناپسندیدگی کا اظہار کیا تھا۔ سیاسی مبصرہن ان کے استعفیٰ کو ایک اہم سرگرمی کے طور پر دیکھ رہے ہیں۔

پاکستان کے ٹیکٹیکل ہتھیاروں کے بارے یہ مضمون بھی پڑھیں

پاکستان کے ٹیکٹیکل ایٹمی ہتھیار حتف اور نصر بھارتی جارحیت کیلئے سڈن ڈیتھ

LATEST NEWS

CHINESE NEWS

OUR DEFENCE NEWS SITE

spot_img

INDIAN NEWS