Monday, August 2, 2021

امریکی گلوکارہ ریحانہ اور میا خلیفہ بھارتی کسانوں کی حمایت اور بھارتی اداکارہ کنگنا رناوت پاکستان کیخلاف بول اٹھی

امریکی گلوکارہ ریحانہ نے دنیا کی توجہ انڈیا میں کسان احتجاج اور مظاہرین کیلئے انٹرنیٹ کی بندش کی طرف دلائی جبکہ ماڈل میا خلیفہ نے بھی اسے انڈیا میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں قرار دیا ہے۔

ہندوستانی اداکارہ کنگنا رناوت اور انڈین پریس میڈیا کے لوگوں نے بھارت میں کسانوں کے احتجاج کی حمایت میں بولنے والی مشہور امریکی گلوکارہ ریحانہ کو بیوقوف جیسے القابات دے کر اس پر پاکستان سے پیسے لینے کا الزام لگایا ہے۔ بھارتی دائیں بازو کے عناصر ریحانہ پر پاکستان کے ایما پر ہندوستان میں جاری کسانوں کے احتجاج کی حمایت کا الزام لگاتے ہیں۔ بھارتی وزارت خارجہ کے ترجمان نے ریحانہ اور میا خلیفہ کے کسان تحریک کی حمایت میں بیانات ے جواب میں شدید رد عمل کا اظہار کیا ہے۔

اپنے ٹویٹ پیغام میں ریحانہ نے دنیا کی توجہ انڈیا میں جاری اس احتجاج اور اس میں موجود مظاہرین کی انٹرنیٹ تک رسائی محدود کیے جانے کی طرف دلائی تھی۔ اسی طرح مشہور گلوکارہ میا خلیفہ نے بھی اسے انڈیا میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں قرار دیا ہے۔

امریکی سنگر ریحانہ نے ٹویٹ میں کہا تھا کہ ” ہم اس کے بارے میں بات کیوں نہیں کررہے ہیں ؟ ” ان کے اس ٹویٹ کے بعد جوابات میں زیادہ تر غیر تصدیق شدہ بھارتی ٹویٹر اکاؤنٹس سے غصیلے جوابی پیغامات کی بھرمار ہوئی۔ ان پیغامات میں کہا گیا تھا کہ اس نے کسانوں کی حمایت میں اس لئے ٹویٹ کیا ہے،  کیونکہ اس نے پاکستان سے پیسہ لیا ہے۔ جبکہ کچھ لوگوں کے مطابق ریحانہ اس مسئلے کے بارے میں بات کرنے کیلئے بہت کچھ نہیں جانتی ہیں۔

یاد رہے کہ لاکھوں کسان 26 نومبر سے نئی دہلی کے مضافات میں ہندوستان کے زراعت کے شعبے کو نظرانداز کرنے کے خلاف کیمپوں میں احتجاج کر رہے ہیں۔  پچھلے ہفتے ایک ریلی میں مشتعل ہجوم نے متشدد رویہ اپنایا تھا ۔ اس ریلی نے دہلی کے تاریخی لال قلعہ پر کسان تحریک کا پرچم لہرایا تھا۔ اس ریلی پر 2 سے زائد مظاہرین ہلاک اور درجنوں زخمی ہوئے تھے۔ جس کے بعد پولیس نے درجنوں کسانوں کو حراست میں لے لیا تھا۔

طیب اردگان کے مسئلہ کشمیر پر بیان کے بارے یہ خبر بھی پڑھیں

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں مسئلہ کشمیر پر صدر اردوغان کی آواز گونج اٹھی

LATEST NEWS

CHINESE NEWS

OUR DEFENCE NEWS SITE

spot_img

INDIAN NEWS